(Bal-e-Jibril-095) (تیرے سینے میں دم ہے، دل نہیں ہے) Tere Sine Mein Dam Hai, Dil Nahin Hai

ترے سینے میں دم ہے، دل نہیں ہے

ترے سینے میں دم ہے، دل نہیں ہے
ترا دم گرمی محفل نہیں ہے
گزر جا عقل سے آگے کہ یہ نور
چراغ راہ ہے، منزل نہیں ہے

Comments are closed.

Create a free website or blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: