(Zarb-e-Kaleem-070) (قم باذن اللہ) Qum Bi Izinillah

قم باذن اللہ جہاں اگرچہ دگر گوں ہے، قم باذن اللہ وہی زمیں، وہی گردوں ہے، قم باذن اللہ دگر گوں: موافق نہ ہونا۔ قم باذن اللہ: اللہ کے حکم سے اٹھ۔ کیا نوائے 'اناالحق' کو آتشیں جس نے تری رگوں میں وہی خوں ہے، قم باذن اللہ غمیں نہ ہو کہ پراگندہ ہے شعور... Continue Reading →

(Zarb-e-Kaleem-069) (موت) Mout

موت لحد میں بھی یہی غیب و حضور رہتا ہے اگر ہو زندہ تو دل ناصبور رہتا ہے غیب و حضور: محبوب حقیقی سے دوری اور اس کا دیدار۔ مہ و ستارہ، مثال شرارہ یک دو نفس مے خودی کا ابد تک سرور رہتا ہے فرشتہ موت کا چھوتا ہے گو بدن تیرا ترے وجود... Continue Reading →

(Zarb-e-Kaleem-068) (احکام الہی) Ahkam-e-Ellahi

احکام الہی پابندی تقدیر کہ پابندی احکام یہ مسئلہ مشکل نہیں اے مرد خرد مند اک آن میں سو بار بدل جاتی ہے تقدیر ہے اس کا مقلد ابھی ناخوش، ابھی خورسند خورسند: خوش باش۔ تقدیر کے پابند نباتات و جمادات مومن فقط احکام الہی کا ہے پابند English Translation: احکام الہی پابندی تقدیر کہ... Continue Reading →

(Zarb-e-Kaleem-067) (امراے عرب سے) Umra’ay Arab Se

امرائے عرب سے کرے یہ کافر ہندی بھی جرات گفتار اگر نہ ہو امرائے عرب کی بے ادبی یہ نکتہ پہلے سکھایا گیا کس امت کو؟ وصال مصطفوی، افتراق بولہبی مصطفوي: مصطفے (صلعم) کا پیغام اتفاق۔ وصال افتراق بولہبي: ابو لہب کا پیغام نفاق پھیلانا ہے۔ نہیں وجود حدود و ثغور سے اس کا محمد... Continue Reading →

(Zarb-e-Kaleem-066) (لا و الا) La-wa-Illa

لا و الا فضائے نور میں کرتا نہ شاخ و برگ و بر پیدا سفر خاکی شبستاں سے نہ کر سکتا اگر دانہ برگ و بر: پتے اور پھل۔ خاکي شبستاں: مٹی کا تاریک گھر یعنی زمین۔ نہاد زندگی میں ابتدا 'لا'، انتہا 'الا' پیام موت ہے جب 'لا ہوا الا' سے بیگانہ زندگي: اصل... Continue Reading →

(Zarb-e-Kaleem-065) (اشاعت اسلام فرنگستان میں) Ishaat-e-Islam Farangistan Mein

اشاعت اسلام فرنگستان میں ضمیر اس مدنیت کا دیں سے ہے خالی فرنگیوں میں اخوت کا ہے نسب پہ قیام نسب: خاندان، قبیلہ۔ اخوت: بھائی چارہ۔ بلند تر نہیں انگریز کی نگاہوں میں قبول دین مسیحی سے برہمن کا مقام دين مسيحي: عیسائی مذہب۔ اگر قبول کرے، دین مصطفی، انگریز سیاہ روز مسلماں رہے گا... Continue Reading →

(Zarb-e-Kaleem-064) (آزادی) Azadi

آزادی ہے کس کی یہ جرات کہ مسلمان کو ٹوکے حریت افکار کی نعمت ہے خدا داد حريت افکار: خیالات کی آزادی۔ چاہے تو کرے کعبے کو آتش کدہ پارس چاہے تو کرے اس میں فرنگی صنم آباد آتش کدہ پارس: اہل فارس کا آتش کدہ۔ قرآن کو بازیچہ تاویل بنا کر چاہے تو خود... Continue Reading →

(Zarb-e-Kaleem-063) (پنجابی مسلمان) Punjabi Musalman

پنجابی مسلمان مذہب میں بہت تازہ پسند اس کی طبیعت کر لے کہیں منزل تو گزرتا ہے بہت جلد تحقیق کی بازی ہو تو شرکت نہیں کرتا ہو کھیل مریدی کا تو ہرتا ہے بہت جلد تاویل کا پھندا کوئی صیاد لگا دے یہ شاخ نشیمن سے اترتا ہے بہت جلد English Translation: پنجابی مسلمان... Continue Reading →

(Zarb-e-Kaleem-062) (مرد مسلمان) Mard-e-Musalman

مرد مسلمان ہرلحظہ ہے مومن کی نئی شان، نئی آن گفتار میں، کردار میں، اللہ کی برہان! برہان: نشان، حجت۔ قہاری و غفاری و قدوسی و جبروت یہ چار عناصر ہوں تو بنتا ہے مسلمان قہاری: جس سے دشمن ڈر جائے ۔ غفار: بادشاہ، خطا کاروں سے درگزر کرنے والا۔ قدوسی: کردار کی پاکیزگی والا۔... Continue Reading →

(Zarb-e-Kaleem-061) (مہدی) Mehdi

مہدی قوموں کی حیات ان کے تخیل پہ ہے موقوف یہ ذوق سکھاتا ہے ادب مرغ چمن کو مجذوب فرنگی نے بہ انداز فرنگی مہدی کے تخیل سے کیا زندہ وطن کو مجذوب فرنگی: دیوانہ فرنگی، یعنی تخیّل سپر مین کا خالق نیطشے۔ اے وہ کہ تو مہدی کے تخیل سے ہے بیزار نومید نہ... Continue Reading →

Create a free website or blog at WordPress.com.

Up ↑