(Rumuz-e-Bekhudi-31) (عرض حال مصنف با حضور رحمتہ للعالمین) A’rz-e-Hal-e-Musanif Ba Huzur Rahmatul-lil-Alameen (S.A.W)

عرض حال مصنف بحضور رحمة للعالمینعرض حال مصنّف بحضور رحمتہ ا لعالمین (صلعم)۔اے ظہور تو شباب زندگی جلوہ ات تعبیر خواب زندگی(آپ (صلعم) کی تشریف آوری سے زندگی اپنے شباب کو پہنچی ؛ آپ (صلعم) کا ظہور خواب زندگی کی تعبیر ہے ( آپ صلعم) مقصود کائنات ہیں۔)اے زمین از بارگاہت ارجمندآسمان از بوسۂ بامت... Continue Reading →

(Rumuz-e-Bekhudi-30) (ولم یکن لہ کفواً احد) Walam yakun lahu kufuwan ahad

ولم یکن لہ کفواً احدمسلم چشم از جہان بر بستہ چیست؟فطرت این دل بحق پیوستہ چیست؟(مسلمان جس نے دنیا سے آنکھیں بند کر لی ہیں (اسے قابل التفات نہیں سمجھا) اور اللہ تعالے سے دل لگایا ہے اس کی فطرت کیا ہے؟)لالہ ئی کو بر سر کوہی دمیدگوشۂ دامان گلچینی ندید(اس کی مثال یوں ہے... Continue Reading →

(Rumuz-e-Bekhudi-29) (لم یلد ولم یولد) Lam yalid walam yoolad

لم یلد ولم یولد قوم تو از رنگ و خون بالاتر است قیمت یک اسودش صد احمر است (ملت اسلامیہ رنگ و خون سے بالا تر ہے؛ اس کے ایک سیاہ فام کی قیمت سینکڑوں گوروں سے بڑھ کر ہے۔) قطرۂ آب وضوی قنبری در بھا برتر ز خون قیصری (قنبر (حضرت علی (رحمتہ اللہ... Continue Reading →

(Rumuz-e-Bekhudi-28) (اﷲالصمد) Allahu assamad

اﷲالصمدگر بہ اﷲ الصمد دل بستہ ئیاز حد اسباب بیرون جستہ ئی(اگر تو نے اﷲ الصمد سے دل لگایا ہے تو تو اسباب کی حدود کو پھلانگ گیا۔)بندۂ حق بندۂ اسباب نیستزندگانی گردش دولاب نیست(اللہ تعالے کا بندہ بندہء اسباب نہیں؛ اس کے لیے زندگی رہٹ کی گردش نہیں۔)مسلم استی بے نیاز از غیر شواھل... Continue Reading →

(Rumuz-e-Bekhudi-27) (قل ہواللہ احد) Qul huwa Allahu ahad

مطالب مثنوی کا خلاصہ سورہ اخلاص کی تفسیر کی صورت میں : قل ہواللہ احد من شبی صدیق را دیدم بخواب گل ز خاک راہ او چیدم بخواب (میں نے ایک رات سیدنا صدیق اکبر (رضی اللہ ) کو خواب میں دیکھا اور ان کے راستے کی خاک سے پھول چنے (ان کے ارشادات سے... Continue Reading →

Create a free website or blog at WordPress.com.

Up ↑